Dil Mai Kam Se Kam Malal

Dil Mai Kam Se Kam Malal To Rakhiye

Nisbat e Mah o To Rakhiye

دل میں کم کم ملال تو رکھیے
نسبتِ ما ہ و سال تو رکھیے

آپ کو اپنی تمکنت کی قسم
کچھ لحاظِ جمال تو رکھیے

dil mai malal

صبر تو آنے دیجئے دل کو
اپنا پانا محال تو رکھیے

جانے مجھ سے یہ کون کہتا تھا
آپ اپنا خیال تو رکھیے

رہے جاناں کی یاد تو دل میں
دشت میں اک غزال تو رکھیے

آپ اپنی گلی کے سائل کو
کم سے کم پُر سوال تو رکھیے

تیغ تو جون پھینک دیجیے
ہاتھ میں اپنے ڈھال تو رکھیے

جون ایلیا

Comments

comments